Speeches

Asfandyar Wali Khan challenging Imran Khan

کپتان نے ہمیشہ مجھ پرملائشیااوردبئی میں جائیدادیں بنانے کاالزام لگایامیں چیلنج کرتا ہوں کہ وہ جائیدادیں سامنے لائیں تو آدھی میں انہیں دے دوں گا،باجی سلائی مشینوں سے اربوں کی مالک کیسے بن گئی؟تحقیقات کرنے والوں نے اپنی توپوں کا رخ اپوزیشن کی طرف موڑ رکھا ہے

Speeches

Asfandyar Wali Khan about 18th amendment

حقوق چھیننے کی اجازت نہیں دینگے ،اٹھارویں ترمیم کی کسی بھی شق کو چھیڑا گیا تو اے این پی سڑکوں پر ہو گی،اے این پی اور پیپلزپارٹی کی حکومت میں اس ترمیم پر 5ماہ تک ایسی کمیٹی کام کرتی رہی جس میں اس وقت کی تمام سیاسی جماعتوں کی نمائندگی موجود تھی

Speeches

Asfandyar Wali Khan about Sahiwal incident

راؤ انوار سلسلے کی کڑی ساہیوال سانحہ پر بھی مٹی ڈالنے کی کوشش کی جا رہی ہے،اگر نقیب اللہ سمیت چار سو سے زائد انسانوں کے قاتل کو پھانسی پر لٹکایا جاتا تو ساہیوال کا واقعہ پیش نہ آتا،پوری قوم قاتل کو قاتل ،ظالم کو ظالم اور مظلوم کو مظلوم کہنے کیلئے آواز اٹھائے

Speeches

Asfandyar Wali Khan about missing persons and FATA

لاپتہ افراد کو اٹھانے والے چہرے بے نقاب کرنے کی ضرورت ہے،لاپتہ افراد کے لواحقین کی اپنے پیاروں کی راہ تکتے آنکھیں پتھرا گئی ہیں،تمام افراد کو بازیاب کرایا جائے،قبائیلی اضلاع میںامن کے بغیر ملک میں امن قائم نہیں ہوسکتا ملی مشر کا ولی خان کی برسی تقریب سے خطاب

Speeches

Asfandyar Wali Khan about Chairman NAB and CJ of Pakistan

اسفندیار ولی کا احتساب کے حوالے سے کپتان کو مناظرے کا چیلنج،اگر چئیرمین نیب اور چیف جسٹس آصف علی زرداری کی بہن اور نواز شریف کے بیٹوں سے منی ٹریل مانگ سکتا ہے تو کپتان کے بہن سے بھی منی ٹریل مانگیں تاکہ دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہوجائے

Speeches

Asfandyar Wali Khan about Establishment role in Politics

کپتان کی ڈوریں کسی اور کی ہاتھوں میں ہے،وہ اپنی مرضی سے کپتان کی ڈوریں ہلاتے ہیں،کپتان کی ڈوریں ہلانے والوں کو واضح کرنا چاہتا ہوں کہ اگر ملک کی بقا اُن کو عزیزہے تو مزید کپتان کے ذریعے ملک کو مزید تباہ نہ کریں ورنہ روس جیسے مضبوط ملک کی مثال ہمارے سامنے ہیں

Speeches

Asfandyar Wali Khan about Afghan Peace process

افغان امن مذاکرات صرف وہی ہونگے جس میں افغان حکومت کو اعتماد میں لیا جائے،حکومت پاکستان جو مذاکرات منعقد کرارہی رہی ہے اُس میں افغان حکومت کی عدم شمولیت لمحہ فکریہ ہے،افغان حکومت کو مذاکرات میں شامل نہ کرانا قومی اسمبلی کی متفقہ قرارداد کی خلاف ورزی ہے